Thursday, February 29, 2024

حافظ حمد اللہ مسلح حملے میں بال بال بچ گئے

- Advertisement -

چمن میں جے یو آئی (ف) کے حافظ حمد اللہ مسلح حملے میں بال بال بچ گئے۔

نامعلوم حملہ آوروں نے چمن میں جمعیت علمائے اسلام فضل (جے یو آئی-ف) کے سینئر رہنما حافظ حمد اللہ صبور کو نشانہ بنایا، لیکن وہ اپنے محافظوں کی جوابی کارروائی سے محفوظ رہے۔

انگلش میں خبریں پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں 

تفصیلات کے مطابق حمد اللہ کی گاڑی پر نامعلوم افراد نے فائرنگ کردی، فائرنگ کا سلسلہ پانچ منٹ تک جاری رہا۔

حمد اللہ کے محافظوں کی جوابی فائرنگ کے بعد حملہ آور فرار ہوگئے۔ خوش قسمتی سے جے یو آئی-ف کے رہنما حملے میں مکمل طور پر محفوظ رہے۔

ملک میں عام انتخابات سے ایک روز قبل بلوچستان میں دہشت گردی میں اضافہ دیکھا جا رہا ہے۔

اس سے قبل بلوچستان کے اضلاع پشین اور قلعہ سیف اللہ میں دو بم دھماکوں میں کم از کم 26 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں: بلوچستان میں بم دھماکوں میں 24 افراد ہلاک

پشین میں دھماکہ ضلع پشین کی تحصیل خانوزئی میں آزاد امیدوار اسفندیار خان کاکڑ کی انتخابی مہم کے دفتر کو نشانہ بنایا گیا، ضلع پشین کے حلقہ پی بی 47 میں دھماکہ ہوا جب کہ قلعہ سیف اللہ میں بم دھماکہ جے یو آئی (ف) کے انتخابی دفتر کے باہر ہوا۔

جے یو آئی-ایف کے رہنما گزشتہ سال ستمبر میں صوبے کے مستونگ ضلع میں سفر کے دوران ایک بم حملے میں بال بال بچ گئے تھے۔

تازہ ترین خبریں پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں 

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں