Thursday, May 30, 2024

بھارت کا ایک اور مگ 21 طیارہ تباہ

- Advertisement -

بھارتی حکام نے بتایا کہ پیر کے روز ہندوستان میں زمین پر موجود تین افراد کی موت اس وقت ہوئی جب ایک روسی ساختہ مگ 21 فوجی طیارہ آن بورڈ ایمرجنسی کا شکار ہو گیا۔

ہندوستان کی فضائیہ نے حالیہ برسوں میں کئی حادثات دیکھے ہیں، جن میں سے اکثر کا تعلق سابق سوویت یونین کی طرف سے فراہم کردہ کئی دہائیوں پرانے طیارے مگ 21 سے ہیں۔

پولیس اہلکار سدھیر چودھری کے مطابق، مگ لڑاکا طیارہ مغربی ریاست راجستھان میں مکان پر گر کر تباہ ہو گیا، جس کے نتیجے میں تین مقامی افراد ہلاک ہو گئے۔

انگلش میں خبر پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں

ہندوستانی فضائیہ آئی اے ایف نے کہا کہ پائلٹ بحفاظت باہر نکل گیا اور یہ حادثہ معمول کی تربیتی سواری میں ٹیک آف کے فوراً بعد پیش آیا۔

آئی اے ایف نے جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کرا ہے اور حادثے کی وجہ جاننے کے لیے کورٹ آف انکوائری تشکیل دی ہے۔

یہ حادثہ ہندوستانی فوج کی طرف سے پیش آنے والے حادثات کے سلسلے میں تازہ ترین تھا۔

بھارتی ساختہ فوجی ہیلی کاپٹرگزشتہ ہفتے مقبوضہ کشمیر میں گر کر تباہ ہو گیا تھا ۔

جولائی 2022 میں، دو پائلٹ اس وقت مارے گئے جب ایک مگ -21 راجستھان میں تربیتی پرواز کے دوران گر کر تباہ ہو گیا۔

گزشتہ ڈھائی سال میں گرنے والا یہ چھٹا مگ -21 طیارہ ہے ، جس میں اب تک پانچ پائلٹ ہلاک ہوچکے  ہیں۔

روسی ساختہ مگ -21 جیٹ طیارے پہلی بار 1960 کی دہائی میں سرد جنگ کے دوران ہندوستانی سروس میں داخل ہوئے اور کئی دہائیوں تک ملک کی فضائیہ کی ریڑھ کی ہڈی کے طور پر کام کیا۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں