Tuesday, May 28, 2024

بلاول بھٹو زرداری نے خواتین کو بااختیار بنانے کی درخواست کی

- Advertisement -

وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری کے مطابق اسلام ہمیں لوگوں، قوموں یا خواتین کو نقصان پہنچانے سے منع کرتا ہے۔ انہوں نے عورتوں کے لئے برابری کے حقوق رکھنے پر زور دیا۔ 

 بلاول بھٹو  نے ان خیالات کا اظہار نیویارک میں اقوام متحدہ کے ہیڈ کوارٹر میں کمیشن کے سائیڈ لائنز میں منعقدہ “اسلام میں خواتین” کے عنوان سے متعلق کانفرنس کے دوران کیا۔

ایف ایم بلاول بھٹو زرداری کے مطابق اسلام لوگوں کی درجہ بندی کے لیے نسل، رنگ یا جنس جیسے عوامل کو استعمال کرنے سے منع کرتا ہے۔ ان کے مطابق، اسلام خواتین کو مکمل طور پر انسان کے طور پر دیکھتا ہے، جائیداد کے طور پر نہیں۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ اسلامی قانون اور رسم و رواج یا شریعت کے مطابق عورت کی اپنی سماجی اور قانونی شناخت ہے اور وہ شہری، سیاسی، اقتصادی اور ثقافتی حقوق کے ساتھ ساتھ وراثت، طلاق، نفقہ حاصل کرنے کی اہلیت کی بھی حقدار ہے۔

انگلش میں خبریں پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں

خطاب

انہوں نے اپنے خطاب میں کہا، “اسلامی تاریخ اس بات کی گواہی دیتی ہے کہ مسلم خواتین نے ہمیشہ زندگی کے تمام شعبوں – تعلیم، کاروبار، معاشیات، سیاست اور حکمرانی میں  عظیم کردار ادا کیا ہے،” بلاول نے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے اس اعلان کا حوالہ بھی دیا کہ ہر مسلمان مرد اور عورت پر علم حاصل کرنا فرض ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ ایک بہترین مثال ہے کہ فاطمہ الفہری نے 859 عیسوی میں دنیا کا سب سے قدیم مسلسل چلنے والا تعلیمی ادارہ قائم کیاتھا یہ ایک بہترین مثال ہے۔

ایف ایم بلاول بھٹو زرداری کے مطابق، مسلم معاشروں میں، لاکھوں مسلم خواتین اب بھی سیاست، تعلیم، صحت، سائنس اور تجارت میں نمایاں عہدوں پر فائز ہیں۔ انہوں نے انڈونیشیا کی صدر کے عہدے پر فائز ہونے والی پہلی مسلمان خاتون میگاوتی سوکرنوپوتری، تیونس کی وزیر اعظم نجلا بوڈن، ترکی کی وزیر اعظم تانسو ایلر، کیمبرج یونیورسٹی میں کمپیوٹر سائنس دان السافٹی جیسی خواتین کی مثالیں پیش کیں۔

تاریخ کی مثالیں

وزیر خارجہ بلاول کے مطابق قائد اعظم محمد علی جناح کی بہن نے پاکستان کی تاریخ میں آزادی اور جمہوری دونوں تحریکوں میں اہم کردار ادا کیا۔

وزیر خارجہ بلاول کے مطابق قائد اعظم محمد علی جناح کی بہن نے پاکستان کی تاریخ میں آزادی اور جمہوری دونوں تحریکوں میں اہم کردار ادا کیا۔

انہوں نے اس حقیقت کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ “میری والدہ، محترمہ بے نظیر بھٹو شہید، پہلی مسلم خاتون وزیراعظم تھیں،” آمریت کے خلاف ایک طویل اور مشکل جنگ کے بعد شاندار اکثریت کے ساتھ اس عہدے کے لیے منتخب کیا گیا تھا۔

ایف ایم بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ پاکستان میں خواتین، زندگی کے ہر شعبے میں نمایاں عہدوں پر فائز رہی ہیں، جن میں کابینہ کی وزراء، اسٹیٹ بینک کی گورنر، قومی اسمبلی کی اسپیکر، اعلیٰ عدالتوں کی ججز شامل ہیں۔ اس کے علاوہ حکومت کی سیکرٹریز، ضلعی کمشنرز اور ضلعی پولیس افسران، فوج کی جنرل، فائٹر پائلٹ، سفیر شامل ہیں۔ 

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں