Thursday, February 29, 2024

کینیڈا، چار پاکستانی نژاد کے قتل کے مجرم کو سزا سنانے کا فیصلہ

- Advertisement -

کینیڈا کی عدالت کا چار پاکستانی کے قتل کے مجرم کو سماعت کے دوران فیصلہ

نیتھنیل ویلٹ مین کو جون 2021 میں لندن، اونٹاریو، کینیڈا میں پک اپ ٹرک سے چار پاکستانی کو ہلاک کرنے کا قصوروار پایا گیا۔

ایک پاکستانی نژاد مسلمان خاندان کے چار افراد کو اپنے پک اپ ٹرک سے حملہ کرکے ہلاک کرنے کا مجرم پایا گیا، ان کو آئندہ 4 جنوری اور 5 جنوری کو سزا سنائی جائے گی۔

انگلش میں خبریں پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں 

تازہ ترین خبروں کے مطابق کینیڈا کے میڈیا نے رپورٹ کیا کہ ویلٹ مین جمعہ کو جنوب مغربی اونٹاریو میں واقع شہر کے جنوب مغربی حراستی مرکز سے ویڈیو لنک کے ذریعے ونڈسر کی عدالت میں پیش ہوا۔

ویلٹ مین کو گزشتہ ماہ ایک جیوری کی طرف سے فرسٹ ڈگری قتل کے چار اور قتل کی کوشش کی ایک گنتی کا مجرم قرار دیا گیا تھا جب وہ 6 جون 2021 کو چہل قدمی کے لیے نکلے ہوئے افضل خاندان پر اپنے پک اپ ٹرک سے حملہ کر رہے تھے۔

حملے میں جاں بحق ہونے والوں میں 46 سالہ سلمان افضل، ان کی 44 سالہ اہلیہ مدیحہ سلمان، ان کی 15 سالہ بیٹی یومنہ اور ان کی 74 سالہ دادی طلعت افضل شامل ہیں۔ جوڑے کے نو سالہ بیٹے کو شدید چوٹ لگی لیکن وہ بچ گیا۔

جنوری 2024 میں دو روزہ سزا کی سماعت لندن کی سپریم کورٹ میں جسٹس رینی پومیرنس کے سامنے ہوگی۔ جسٹس پومرنس نے ونڈسر میں 11 ہفتوں کے مقدمے کی بھی نگرانی کی۔

جب کہ مقدمے کی سماعت ونڈسر میں جیوری کے سامنے ہوئی، سزا متاثرین کے اہل خانہ کی درخواست پر لندن میں سنائی جائے گی۔

افضل خاندان پر حملے کی کینیڈا بھر میں مذمت کی گئی۔ پولیس نے اس حملے کو نفرت انگیز جرم قرار دیا جس میں کینیڈا میں اسلامو فوبیا سے نمٹنے کے لیے اقدامات کا مطالبہ کیا گیا۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں