Thursday, May 30, 2024

کراچی کے ساحلی علاقے شدید بارش کے لیے تیار

- Advertisement -

کراچی میں پاکستان کے ساحلی علاقے خطرے سے دوچار ہیں ان علاقوں سے ہزاروں افراد کو نکالا جا رہا ہے، کیونکہ بِپرجوئے سمندری طوفان انتہائی شدید طوفان آج لینڈ فال کرنے والا ہے۔

بیپرجوئے، ایک انتہائی شدید سمندری طوفان ہے، جو اب بندرگاہی شہر کراچی کے ساحلی علاقے سے 300 کلومیٹر کے فاصلے پر منڈلا رہا ہے اور اس میں زیادہ سے زیادہ 145 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں چل رہی ہیں۔

تازہ ترین اپ ڈیٹس کے مطابق، ملک کے جنوب مشرقی علاقے، کراچی، ٹھٹھہ، بدین اور تھرپارکر پر محیط ہیں، اگلے 24 گھنٹوں کے دوران شدید طوفانی موسم دیکھنے کی پیش گوئی کی گئی ہے۔

انگلش میں خبریں پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں

پی ایم ڈی نے خبردار کیا کہ کیٹی بندر اور قریبی ساحلوں کے اپنے لینڈ فال مقام پر، طوفان سے تقریباً 12 فٹ تک لہریں اٹھنے کا امکان ہے، جس کے نتیجے میں سیلاب آسکتا ہے۔

پاکستان کے محکمہ موسمیات نے ایک وارننگ جاری کی، اور پیشین گوئی کی مدت کے دوران، حکام نے ہائی الرٹ کی حالت برقرار رکھتے ہوئے کہا کہ طوفانی ہوائیں عمارتوں کو تباہ کر سکتی ہیں۔

سول اور ملٹری حکام کی جانب سے زیادہ خطرے والے علاقوں سے افراد کو نکالنے کا عمل تیز کر دیا گیا ہے، اور انخلاء کی سرگرمیاں فی الحال جاری ہیں۔ 90فیصد سے زیادہ مقامی آبادی محفوظ مقامات پر منتقل ہو چکی ہے۔

حفاظتی اقدامات

حفاظتی تدابیر کے پیش نظر کراچی سے سکھر کے لیے پروازیں منسوخ کر دی گئی ہیں اور قومی فلیگ کیریئر نے طوفان سے منسلک خطرات کو کم کرنے کے لیے تمام ضروری تیاری کر لی ہے۔

قبل ازیں وزیر اعظم شہباز شریف نے وزیر اعلیٰ سندھ سے ملاقات کی اور ان پر زور دیا کہ وہ عوام کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لیے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائیں۔ وزیر اعظم نے بِپرجوئے طوفان کے ممکنہ اثر سے پیشگی تیاریوں کا جائزہ لینے کے لیے ایک میٹنگ کی بھی صدارت کی۔

کراچی میں پاکستان کے ساحلی علاقوں سے ہزاروں افراد کو نکالا جا رہا ہے، کیونکہ بِپرجوئے سمندری طوفان انتہائی شدید طوفان آج لینڈ فال کرنے والا ہے۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں