Thursday, May 30, 2024

عیدالفطر کے موقع پر وزیراعظم اور صدر پاکستان کا پیغام

- Advertisement -

عیدالفطر2023 کے موقع پر پاکستان کے وزیراعظم شہباز شریف اور صدر پاکستان جناب علوی نے اپنے پیغام قوم تک پہنچائے۔

وزیراعظم نے عیدالفطر کو دوسروں کی دیکھ بھال اور احساس کا نام دیا جبکہ  صدر  پاکستان علوی نے پورا سال تقویٰ اور ہمدردی کے فضائل برقرار رکھنے کا پیغام دیا۔

ذرائع کے مطابق، ملک کی مشکل معاشی صورتحال اور ریکارڈ توڑ مہنگائی کے باوجود ملک بھر میں عید الفطر انتہائی مذہبی جوش و جذبے کے ساتھ منائی جا رہی ہے۔

نماز فجر کے بعد عید کی نماز ادا کی گئی۔ مساجد میں خطیب اور وسیع ہجوم موجود تھا۔ علماء نے اپنے خطبات میں عید الفطر کے معنی اور فلسفے پر روشنی ڈالی۔

انگلش میں خبریں پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں

ہر سال کی طرح اس سال بھی لوگوں نے روایتی لباس پہن کر مقامی مساجد میں عید کی نماز ادا کی، لوگوں نے گلے مل کر اپنے اہل خانہ، دوستوں اور پڑوسیوں کو عید کی مبارکباد دی۔

ملک بھر کی مساجد میں ملک کی سلامتی اور ترقی کے لیے خصوصی دعائیں بھی کی گئیں۔

وزیراعظم کا پیغام

وزیر اعظم شہباز شریف نےاپنے پیغام میں کہا کہ عیدالفطر ثابت قدمی، اطمینان اور دوسروں کی دیکھ بھال کے جذبے کی عملی عکاسی کا موقع فراہم کرتی ہے۔

انہوں نے عوام سے گزارش کی کہ وہ عید کی خوشیاں ہر مشکل سے دوچار لوگوں تک پہنچائیں۔

وزیر اعظم کے مطابق حکومت عوام کی مالی مشکلات کو کم کرنے کے لیے مسلسل کام کر رہی ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ وہ عید کے موقع پر سیلاب زدگان کی دل کھول کر امداد کریں۔

دہشت گردی کے خلاف کوشش میں اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والے شہداء کے اہل خانہ سے وزیر اعظم شہباز شریف نے دلی تعزیت کا اظہار بھی کیا۔

آپ نے آزادی کی جدوجہد میں فلسطین اور کشمیر کے عوام کے ساتھ اتحاد کا اظہار کیا۔

چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل ساحر شمشاد مرزا اور سروسز کے سربراہان نے عیدالفطر پر قوم کو مبارکباد دی۔

صدر علوی کا پیغام 

عید کے اس پرمسرت موقع پرصدر علوی نے اپنے ہم وطنوں سے کہا کہ وہ ملک کو سیاسی اور اقتصادی استحکام کی طرف منتقل کرنے میں اپنا کردار ادا کریں۔ صدر علوی کے بقول، رمضان نہ صرف ہم میں تقویٰ پیدا کرتا ہے بلکہ ہمیں دوسروں کی مشکلات، بھوک اور اذیت سے بھی بیدار کرتا ہے۔

یہ احساس کسی بھی معاشرے سے غربت اور ناانصافی کو ختم کرنے کی بنیاد کے طور پر کام کر سکتا ہے، انہوں نے مزید کہا کہ عید کے اس موقع پر ہمیں پورا سال تقویٰ اور احساس کی ان فضائل کو برقرار رکھنے اور معاشرے کی بہتری میں اپنا کردار ادا کرنے کا عہد کرنا چاہیے۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں