Thursday, February 29, 2024

یونان کشتی حادثے میں مزید پاکستانی ہلاکتوں کا اضافہ

- Advertisement -

اسلام آباد/ایتھنز، گزشتہ ہفتے یونان کے خوفناک بحری کشتی کے حادثے میں حکام نے مزید لاشوں کی شناخت کی جس میں پاکستانیوں کی ہلاکتوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے اوراب بچاؤ کی امیدیں ختم ہو گئیں ہیں۔

یونان حکام اب تک کشتی حادثے کی لاشیں نکالنے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں، کیونکہ مرنے والوں کی اصل تعداد سینکڑوں میں بتائی جا رہی ہے جو اس واقعے کو اپنی نوعیت کا سب سے مہلک ترین واقع بناتی ہے۔

انگلش میں خبریں پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں

لاپتہ افراد میں سے زیادہ تر کا تعلق گجرات، گوجرانوالہ اور آزاد کشمیر سے ہے اس کے علاوہ سیالکوٹ اور منڈی بہاؤالدین کے سینکڑوں شہریوں کے بھی لاپتہ ہونے کی خبر ہے۔

چونکہ گورنمنٹ کی جانب سے مرنے والوں کی تعداد نامعلوم ہے، بین الاقوامی میڈیا اشارہ کرتا ہے کہ یونانی ساحل کے قریب ڈوبنے والے بھیڑ بھاڑ میں 300 کے قریب پاکستانی شہری ہلاک ہو چکے ہیں۔ ریسکیو کے لیے، یونانی حکام نے اس تباہی سے نمٹنے کے طریقے پر شدید غصہ کا اظہارکیا ہے۔

جنوبی ایشیائی قومیں حالیہ دنوں میں انتہائی مشکل حالات سے گزر رہی ہے، کیونکہ سیاسی عدم استحکام اور معاشی بدحالی نے پاکستانیوں کو بحران زدہ ملک سے بچنے پر مجبور کیا۔ یہی وجہ ہے کہ غیر ہنر مند مزدور اور نچلے طبقے کے لوگ بہتر مستقبل کی تلاش میں یورپ پہنچنے کے لیے خطرناک راستے استعمال کر رہے ہیں۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں