Thursday, February 29, 2024

پاکستان دو صفر سے آگے، فخر زمان کی ایک بار پھر شاندار اننگ

- Advertisement -

راولپنڈی، ڈیرل مچل کے بعد فخر زمان نے ایک بار پھر سنچری بنا ڈالی۔ نتیجہ ایک بار پھر ویسا ہی رہا، پاکستان کے اوپنر نے اپنی ٹیم کی جیت کو یقینی بنایا اورآخرتک کریز پر رہے۔

پنڈی، کرکٹ اسٹیڈیم میں ہفتہ کو دوسرے ایک روزہ بین الاقوامی میچ میں فخر زمان  نے تین دن میں دوسری بار نیوزی لینڈ کے بلے باز کی بہادری کو گرہن لگا دیا۔ بائیں ہاتھ کے کھلاڑی نے شاندار 180 ناٹ آؤٹ اسکور کیے ، پاکستان نے 10 گیندیں باقی رہ کر سات وکٹوں سے فتح حاصل کی۔

فخر نے جمعرات کو سیریز کے افتتاحی میچ میں 117 رنز بنانے کے بعد اپنی مسلسل تیسری ون ڈے سنچری بنائی۔ اس سال کے شروع میں دونوں ٹیموں کی سیریز کے آخری میچ میں بھی انہوں نے نیوزی لینڈ کے خلاف سنچری بنائی تھی۔

انگلش میں خبریں پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں

کھلاڑیوں کی نمایاں کارکردگی

فخر نے شروع سے ہی تعاقب میں تیزی رکھی، اپنے 144 گیندوں کے قیام میں چھ چھکے اور 17 چوکے  لگائے جسکی وجہ سے پاکستان نے آسانی سے 337 رنز کے مجموعہ کو حاصل کرلیا۔

کپتان بابر اعظم  نے بائیں ہاتھ کے بلے باز کو قیمتی مدد فراہم کی، دوسری وکٹ کی شراکت میں فخر کے ساتھ 135 رنز کی شراکت میں 65 رنز بنائے جبکہ محمد رضوان بھی 41 گیندوں پر 54 رنز بنا کر نمایاں رہے۔

مچل، جنہوں نے پہلے ونڈے میں 113 رنز بنائے، اس اننگ میں 129 کے ساتھ اسے بہتر بنایا اور اپنے کپتان ٹام لیتھم کے ساتھ تیسری وکٹ کے لیے 183 رنز کی شراکت داری کی جنہوں نے 98 رنز بنائے لیکن اسکے باوجود، نیوزی لینڈ جیتنے میں ناکام رہا۔

پاکستان نے شاہین شاہ آفریدی اور آف اسپنر شاداب خان کو آرام دیا اور نیوزی لینڈ کو پہلے بلے بازی کی دعوت دی۔ نسیم شاہ وہ واحد گیند باز تھے جو فی اوور میں پانچ سے کم رنز دے سکے۔

نیوزی لینڈ کے اوپنر ول ینگ اس بار جلد ہی آوٹ ہو گئے انہیں 19 رنز بنانے کے بعد حارث رؤف نے وکٹ کیپر رضوان کے ہاتھوں آؤٹ کیا۔اس بار ان کے اوپننگ پارٹنر چاڈ بوز نے مچل کے 86 رنز کی شراکت قائم کی۔

مچل اور لیتھم کی جانب سے محتاط انداز میں آغاز ہوا۔ آغا سلمان کو 53 گیندوں پر چار رنز پر ریورس سویپ کرتے ہوئے مچل نے اپنی ففٹی مکمل کی۔ وہ جب 96 پر کھیل رہے تھے نسیم شاہ نے مچل کا ایک آسان کیچ ڈراپ کیا۔

فخر زمان کی کارکردگی

انہوں نے پہلے تین اوورز میں پانچ چوکے لگائے کیونکہ وہ جانتے تھے کہ پاکستان کے لئے تیز شروعات ضروری ہے۔

فخر نے اٹھائیسویں اوور میں 83 گیندوں پر اپنی سنچری بنائی جس کے چند گیندوں بعد بابر نے 57 رن پر اپنی ففٹی مکمل کی۔ف خر نے 125 گیندوں پر 150 رنز پورے کرے۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں