Thursday, June 13, 2024

پاکستانی نژاد امریکی قانون ساز پر کنیکٹی کٹ میں حملہ

- Advertisement -

امریکی میڈیا نے رپورٹ کیا ہے کہ ریاست کنیکٹی کٹ سے تعلق رکھنے والی پاکستانی نژاد امریکی قانون ساز مریم خان پر ریاست کے دارالحکومت ہارٹ فورڈ میں اہل خانہ کے ساتھ عید الاضحی کی نماز میں شرکت کے بعد حملہ کیا گیا۔

امریکن میڈیا کے مطابق پولیس نے بدھ کے واقعے کے سلسلے میں ایک شخص کو حراست میں لیا ہے جس کے نتیجے میں مریم خان ڈیموکریٹ اور کنیکٹی کٹ ہاؤس آف ریپریزنٹیٹوز کے لیے منتخب ہونے والے پہلے مسلمان خاتون کو معمولی چوٹیں آئیں۔

رپورٹ میں پولیس کے حوالے سے بتایا گیا کہ ملزم پر جمعرات کو ریاستی عدالت میں باضابطہ طور پر فرد جرم عائد کی گئی۔

انگلش میں خبریں پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں 

نیو برطانیہ، کنیکٹیکٹ سے تعلق رکھنے والے 30 سالہ آندرے ڈیسمنڈ کو $250,000 کے بانڈ پر رکھا جا رہا ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ اس پر غیر قانونی روک تھام، حملہ، امن کی خلاف ورزی اور پولیس میں مداخلت کے الزامات عائد کیے گئے تھے۔

پولیس نے ابھی تک حملے کے پیچھے محرکات کی تصدیق نہیں کی ہے۔

میڈیا رپورٹ میں پولیس کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ حملہ صبح 11 بجے کے قریب ایکس ایل سینٹر کے باہر ہوا ،جو ایک میدان اور کانفرنس سینٹر بھی ہے، جہاں نماز باجماعت ادا کی جا رہی تھی۔

پولیس نے بتایا کہ مشتبہ شخص نے مریم  خان سے اس وقت رابطہ کیا جب وہ مرکز کے باہر اپنے اہل خانہ کے ساتھ تصویریں کھینچ رہی تھی اور کئی مشتبہ تبصرے کیے۔

اس کے بعد اس نے مبینہ طور پر مریم خان کو جانے سے روکنے کی کوشش کی اور ان پر حملہ کیا۔

رپورٹ میں پولیس کے حوالے سے بتایا گیا کہ مشتبہ شخص نے بھاگنے کی کوشش کی، لیکن ایک ساتھی نے اس کا پیچھا کیا اور اسے پکڑ لیا۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں