Tuesday, May 28, 2024

قطر نے جاسوسی کے الزام میں ہندوستانیوں کو قیدکر لیا

- Advertisement -

اسرائیل کے لیے آبدوز کے پروگرام کی جاسوسی کے الزام میں آٹھ ہندوستانی شہریوں کو مہینوں سے قطر میں قید کیا ہوا ہے، انہیں ممکنہ طور پر سزائے موت کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

قطر میں قید ان قیدیوں کے بارے میں  ہندوستانی، پاکستانی، اسرائیلی اور عرب میڈیا ایجنسیوں نے اطلاع دی ہے کہ ان آٹھ افراد کو اگست کے آخر میں حراست میں لیا گیا تھا اور یہ ہندوستانی بحریہ کے سابق افسران ہیں۔

آٹھوں مجرموں کو سفارتی چینلز کے ذریعے نئی دہلی تک رسائی حاصل ہے، ہندوستانی خبر رساں ادارے کے مطابق، دوحہ نے نئی دہلی کو مطلع کیا کہ ایسے شواہد موجود ہیں جن سے پتہ چلتا ہے کہ سابق افسران نے اسرائیل کو معلومات فراہم کی تھیں۔

انگلش میں خبریں پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں

ہندوستانی شہریوں کا پہلا ٹرائل مارچ کے آخر میں ہوا تھا، اور بظاہر اس مہینے میں دوسرا ٹرائل ہونا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق، وہ دہراء گلوبل ٹیکنالوجیز اینڈ کنسلٹنگ سروسز کے سینئر عملے کے ارکان تھے، جو ایک ایسی فرم تھی جس نے اٹلی میں تعمیر کی جانے والی ہائی ٹیک آبدوزوں کے حصول کے لیے قطری اقدام کے بارے میں مشورہ دیا تھا جو ریڈار کی کھوج سے بچ سکتی ہیں۔

ایک پاکستانی اخبار نے گزشتہ ہفتے رپورٹ دی تھی کہ کمپنی اب قطر کی طرف سے بند کی جا رہی ہے، جس میں پچھتر ہندوستانی شہری ہیں، جن میں سے زیادہ تر سابق بحریہ کے اہلکار ہیں۔

قطر2020 میں اطالوی جہاز ساز فنکنتییری ایس پی اے  نے ایک بحری اڈہ بنانے اور اپنے فوجی بیڑے کو برقرار رکھنے کی ایک بڑی تجویز کے حصے کے طور پر آبدوزوں کی تعمیر پر تعاون کرنے کے لیے ایک مفاہمت کی یادداشت ایم او یو  پر دستخط کیے تھے۔ کہا جاتا ہے کہ ایم او یو پر عمل درآمد نہیں ہوا ہے۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں