Thursday, May 30, 2024

حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں 5 روپے فی لیٹر کمی کردی۔

- Advertisement -

اسلام آباد: حکومت نے منگل کو پیٹرول کی قیمت میں 5 روپے فی لیٹر کمی کی جس کا اطلاق یکم مارچ (آج) سے ہوگا۔

تاہم، ڈیزل کی قیمت میں کمی کی پیش گوئی کے باوجود، حکومت نے پیٹرولیم لیوی کی شرح بڑھانے کے لیے اسے برقرار رکھا۔

مٹی کے تیل کی قیمت میں بھی 15 روپے فی لیٹر کمی دیکھی گئی۔

لائٹ ڈیزل آئل (ایل ڈی او) کی قیمت میں بھی 12 روپے فی لیٹر کی بڑی کمی دیکھی گئی۔

حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں کمی کی کیونکہ وہ پہلے ہی اس پر 50 روپے فی لیٹر پیٹرولیم لیوی وصول کر رہی تھی۔ اس لیے اس کے پاس پیٹرولیم لیوی میں مزید کمی کو ایڈجسٹ کرنے کی گنجائش نہیں تھی۔

پیٹرول کی قیمت 272 روپے سے کم ہو کر 267 روپے فی لیٹر ہوگئی۔

انگلش میں پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں

پیٹرول موٹر سائیکلوں اور کاروں میں استعمال ہوتا ہے اور خاص طور پر پنجاب میں کمپریسڈ نیچرل گیس (سی این جی) کا متبادل ہے۔

سی این جی ریٹیل آؤٹ لیٹس درآمد شدہ مائع قدرتی گیس (ایل این جی) استعمال کر رہے ہیں۔ تاہم، ایل این جی کی عدم دستیابی کی وجہ سے حالیہ موسم سرما کے مہینوں میں آؤٹ لیٹس کام نہیں کر رہے تھے۔

ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت 280 روپے فی لیٹر پر برقرار ہے۔

حکومت کی جانب سے اس کی قیمت میں 20 روپے فی لیٹر کمی کی توقع تھی۔ تاہم حکومت کے پاس اس پر پٹرولیم کی قیمت 40 روپے سے بڑھا کر 50 روپے فی لیٹر کرنے کی گنجائش تھی۔ اس لیے حکومت نے اس کی قیمت میں کمی نہیں کی اور اس کے بجائے مزید ریونیو اکٹھا کرنے کے لیے ٹیکس کی شرح میں اضافہ کیا۔

حکومت نے پہلے ہی بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کے ساتھ کیے گئے وعدے کے مطابق مارچ اور اپریل میں پیٹرولیم لیوی کی شرح بڑھانے کا فیصلہ کیا تھا۔

ڈیزل بڑے پیمانے پر ٹرانسپورٹ اور زراعت کے شعبوں میں استعمال ہوتا ہے۔

اس کی قیمت میں کمی کے نتیجے میں کسانوں کے لیے راحت اور مہنگائی کے مثبت اثرات مرتب ہو سکتے ہیں۔

مٹی کا تیل کھانا پکانے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے، خاص طور پر پاکستان کے دور دراز شمالی علاقوں میں جہاں ایل پی جی دستیاب نہیں ہے۔

پاکستانی فوج بھی ملک کے شمالی حصوں میں مٹی کے تیل کا ایک اہم صارف تھا۔

مٹی کے تیل کی قیمت 202.73 روپے کے مقابلے میں 187.73 روپے فی لیٹر ہوگئی۔

ایل ڈی او صنعت میں استعمال ہوتا ہے اور اب 196.68 روپے فی لیٹر کے مقابلے میں 184.68 روپے فی لیٹر میں دستیاب ہوگا۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں