Tuesday, May 28, 2024

پیٹرول کی قیمت میں فی لیٹر آٹھ روپے کی کمی

- Advertisement -

وفاقی حکومت نے آدھی رات سے پیٹرول کی قیمت میں 8 روپے فی لیٹر کمی کا اعلان کرا ہے۔

وفاقی حکومت کے پیٹرول کی قیمت میں فی لیٹر آٹھ روپے کی کمی سے ملک میں موٹر سائیکل سواروں اور کار مالکان کو کافی ریلیف ملا ہے۔

فنانس ڈویژن نے رات گئے ایک بیان میں کہا کہ یکم جون 2023 آج سے، پیٹرول کی قیمت 270 روپے فی لیٹر سے کم ہو کر 262 روپے فی لیٹر ہو جائے گی، جس میں 8 روپے فی لیٹر کی کمی واقع ہو گی۔

انگلش میں خبریں پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

اسی طرح، ایج ایس ڈی اب پچھلے 258 روپے فی لیٹر سے 253 روپے فی لیٹر، اور ایل ڈی او 147.68 روپے فی لیٹر پر فروخت کیا جائے گا، جو پچھلے روپے 152.68 سے کم ہے۔ بیان کے مطابق مٹی کے تیل کی قیمت میں 147.68 روپے فی لیٹر کوئی تبدیلی نہیں کی گئی۔

فنانس ڈویژن نے کہا کہ حکومت نے صارفین کو ریلیف فراہم کرنے کے لیے پیٹرولیم مصنوعات کی موجودہ قیمتوں میں کمی کا فیصلہ کیا ہے۔ پٹرول موٹر سائیکلوں اور چھوٹی کاروں میں استعمال ہوتا ہے اور یہ کمپریسڈ نیچرل گیس یعنی سی این جی کا متبادل بھی ہے۔

ایج ایس ڈی بڑے پیمانے پر زراعت اور ٹرانسپورٹ کے شعبوں میں استعمال ہوتا ہے اور ایل ڈی او صنعت میں استعمال ہوتا ہے۔ ایج ایس ڈی کی قیمت میں کمی کا کسانوں پر صحت مند اثر پڑے گا اور اس سے سامان کی نقل و حمل کی لاگت میں کمی واقع ہو سکتی ہے۔

مٹی کا تیل پاکستان کے دور دراز علاقوں میں استعمال ہوتا ہے، خاص طور پر ملک کے شمالی حصے میں جہاں مائع پٹرولیم گیس ایل پی جی کھانا پکانے کے لیے دستیاب نہیں ہے۔ فوج ملک کے شمالی حصے میں مٹی کے تیل کا ایک اہم صارف بھی ہے۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں