Thursday, May 30, 2024

روس کے ساتھ سیاسی مشاورت کا آج پانچواں دور

- Advertisement -

پاکستان اور روس کے درمیان منگل کو ہونے والی دوطرفہ سیاسی مشاورت دونوں ممالک کے درمیان بات چیت میں اضافے کا ایک اور اشارہ ہے۔

دفتر خارجہ کے ایک بیان کے مطابق پاکستان اور روس فیڈریشن کے درمیان دوطرفہ سیاسی مشاورت کا پانچواں دور 20 جون کو اسلام آباد میں ہوگا۔

انگلش میں پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں

روس کے نائب وزیر خارجہ آندرے روڈینکو 20-21 جون 2023 کے اسلام آباد کے دورے پر گروپ کی قیادت کریں گے۔ پاکستان سے آنے والی ٹیم کی قیادت سیکرٹری خارجہ ڈاکٹر اسد مجید خان کریں گے۔

دونوں فریق اپنے دوطرفہ تعلقات کی صورتحال کا جائزہ لیں گے، مستقبل میں تعاون کے لیے مشترکہ دلچسپی کے شعبوں کی نشاندہی کریں گے، اور اہم قومی اور بین الاقوامی واقعات پر تجارتی آراء کا جائزہ لیں گے۔

پاکستان اور روس کے درمیان اعتماد، احترام اور افہام و تفہیم پر مبنی خوشگوار تعلقات ہیں۔ بیان کے مطابق، اس سال دونوں ممالک سفارتی تعلقات کے آغاز کی 75 ویں سالگرہ منا رہے ہیں۔

روس اور پاکستان، جو سرد جنگ کے دوران، خاص طور پر سوویت یونین کے افغانستان پر حملے کے دوران مخالف فریق تھے، اس کے بعد سے قریبی تعلقات استوار کر چکے ہیں۔

پاکستان معاہدہ

روسی تیل کی پہلی کھیپ حال ہی میں کراچی بندرگاہ پر پہنچی ہے۔ دونوں ممالک کے درمیان معاہدہ 45,000 میٹرک ٹن خام تیل لے جانے والے جہاز کا حصہ تھا۔ پاکستان کو جلد ہی 50,000 میٹرک ٹن تیل پر مشتمل دوسرا کارگو ملے گا۔

تیل کی ابتدائی کھیپ ایک پائلٹ تجربے کا حصہ ہے تاکہ یہ طے کیا جا سکے کہ آیا پاکستان اس معاہدے سے فائدہ اٹھا سکتا ہے۔

پاکستان پہلے ہی خلیج سے تیل درآمد کرتا ہے، بنیادی طور پر سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور کویت سے۔

حالیہ دنوں میں پاکستان نے روس سے افغانستان کے راستے ایل پی جی بھی درآمد کی ہے۔ ادائیگی کے توازن کے معاملے کو دیکھتے ہوئے، پاکستان اپنے انتخاب کو متنوع بنانے اور امریکی کرنسی پر اپنا انحصار کم کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ پاکستان نے امریکی ڈالر پر اپنا انحصار کم کرنے کی کوشش میں روس کو چینی یوآن میں ادائیگی کی۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں