Tuesday, May 28, 2024

مزید دو سینئر رہنماؤں نے پی ٹی آئی چھوڑ دی

- Advertisement -

اتوار کے روز پاکستان تحریک انصاف پی ٹی آئی کے لیے ایک بڑا دھچکا، سابق حکمران جماعت کے دو مزید رہنماؤں نے اعلان کیا کہ وہ علیحدگی اختیار کر رہے ہیں۔

پی ٹی آئی کے دونوں رہنماؤں میں سے ایک  خیبرپختونخوا سے عثمان ترکئی اور دوسرے کراچی کے لیے پارٹی کے صدر آفتاب حسین صدیقی ہیں انہوں  نے اتوار کو اعلان کیا کہ وہ پارٹی چیئرمین عمران خان کی 9 مئی کو گرفتاری کے بعد سے ملک بھر میں ہونے والی توڑ پھوڑ کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے پارٹی چھوڑ رہے ہیں۔ یہ پاکستان تحریک انصاف پی ٹی آئی کے لیے ایک اہم دھچکا ہے۔

یہ استعفے اس وقت سامنے آئے ہیں جب اپوزیشن پارٹی کے دیگر رہنماؤں نے تنظیم چھوڑنے کے اپنے ارادے کا اعلان کیا، اور پی ٹی آئی کی جانب سے ملک کی مسلح افواج سے مخالفت کو اپنے فیصلے کی وجہ قرار دیا۔

انگلش میں خبریں پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں

آفتاب صدیقی نے ایک ویڈیو پیغام میں اپنے فیصلے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے خود کو سیاست سے بھی دور کر لیا ہے۔

پی ٹی آئی کراچی کے سابق صدر نے ویڈیو پیغام میں اعلان کیا کہ انہوں نے سیاست چھوڑ دی ہے اور پی ٹی آئی کراچی کے صدر کے عہدے اور قومی اسمبلی کی نشست سمیت تمام عہدوں سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

قوم کی خدمت

پی ٹی آئی کے سابق رہنما نے دعویٰ کیا کہ بطور بزنس مین اب وہ مختلف انداز میں قوم کی خدمت کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے پی ٹی آئی کے رہنما عمران خان کے ساتھ ٹوٹنے کا اشارہ دینے کے لیے پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگایا اور یہ اعلان کیا کہ اب وہ سیاست سے وابستہ نہیں ہیں۔

عثمان تراکئی، جنہیں قومی اسمبلی میں صوابی کی نمائندگی کے لیے منتخب کیا گیا تھا، نے بھی 9 مئی کے واقعات کی روشنی میں پی ٹی آئی چھوڑنے کے اپنے ارادے کا اعلان کیا۔

انہوں نے اعلان کیا کہ وہ پارٹی کی بنیادی رکنیت سے مستعفی ہو رہے ہیں۔

عثمان تراکئی نے بتایا کہ 9 مئی کو جو کچھ ہوا وہ شہداء کی یادگار کی توہین تھی۔ میرا تعلق اسی گاؤں سے ہے جہاں سے کیپٹن کرنل شیر خان نے استقبال کیا تھا، اور ہم نے ان کے اعزاز میں ایک ریلی بھی نکالی تھی۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں