Saturday, April 13, 2024

ایم کیو ایم پی کا سندھ میں قائد حزب اختلاف بننےکی کوشش

- Advertisement -

کراچی، اتوار کو پارٹی ذرائع کے مطابق، ایم کیو ایم پی سندھ اسمبلی میں اپنا اپوزیشن لیڈر لانے کے لیے بات چیت کر رہی ہے۔

پارٹی ذرائع کے مطابق پی ٹی آئی کے بعد سندھ اسمبلی میں دوسری بڑی جماعت ایم کیو ایم پی صوبائی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف کے عہدے کے لیے درخواست دے گی۔

پارٹی ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم متعدد پارٹی عہدیداروں پر غور کر رہی ہے جن میں رانا انصار، علی خورشیدی، خواجہ اظہار الحسن، جاوید حنیف اور محمد حسین شامل ہیں۔

انگلش میں خبریں پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں

ذرائع کا کہنا ہے کہ پارٹی اپنا حتمی فیصلہ رابطہ کمیٹی سے مشاورت کے بعد جلد کرے گی۔

پی ٹی آئی کے 10 ارکان کے پارٹی چھوڑنے کے بعد، ایم کیو ایم-پی نے سندھ اسمبلی میں 21 نشستیں حاصل کیں، جس سے وہ ایوان میں سب سے بڑی اپوزیشن جماعت بن گئی۔

پارٹی ذرائع نے بتایا کہ چونکہ اپوزیشن کے پاس اکثریتی نشستیں ہیں اس لیے وہ اپنے لیڈر کو ایوان میں لانے کے لیے کام کریں گے۔

پی ٹی آئی کے حلیم عادل شیخ اس وقت اپوزیشن لیڈر کے طور پر کام کر رہے ہیں۔ عبدالکریم گبول اور شہریار خان نے دو سال قبل پی ٹی آئی کے ہاؤس میں 30 نشستیں جیتنے سے قبل پارٹی چھوڑ دی تھی۔

مئی 2009 میں ہونے والے پرتشدد واقعات کے بعد پارٹی کے کل 28 ارکان میں سے دس نے خود کو اس سے الگ کر لیا ہے۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں