Tuesday, July 16, 2024

یوم تکبیر، پاکستان کے ایٹمی تجربے کو پچیس برس مکمل

- Advertisement -

اٹھائیس 28 مئی 1998 کو کیے گئے ایٹمی تجربات کی یاد میں آج (اتوار) کو ایٹمی تجربات کے پچیس برس مکمل ہونے پر سلور جوبلی (یوم تکبیر) منایا جا رہا ہے جس نے خطے میں پاکستان کو اسٹریٹجک جوہری ڈیٹرنس دیا تھا۔

یہ دن، جسے اب یوم تکبیر کے نام سے یاد کیا جاتا ہے، ہر سال ملک بھر میں قومی فخر اور شکرانے کے دن کے طور پر منایا جاتا ہے جس نے پاکستان کو دنیا کا ساتواں ایٹمی ملک اور اپنے دفاع میں ایٹمی ہتھیار رکھنے والی پہلی مسلم ریاست بنا دیا۔

ان ٹیسٹوں نے نہ صرف پاکستانی قوم کے پاکستان کی علاقائی سالمیت، آزادی اور خودمختاری کے تحفظ کے عزم کا اظہار کیا بلکہ جنوبی ایشیا میں سٹریٹجک توازن کو برقرار رکھنے کی خواہش کا بھی اظہار کیا۔

ملک نے خطے میں طاقت کا توازن حاصل کیا۔

انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) نے جاری کردہ ایک خصوصی بیان میں کہا، “آج، پوری پاکستانی قوم یوم تکبیر کی سلور جوبلی منا رہی ہے اور قابل اعتماد کم سے کم ڈیٹرنس کے قیام کی شاندار کامیابی کو یاد کر رہی ہے۔”

انگلش میں پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ اس کامیابی نے ہمارے خطے میں پاور ڈائنامکس کو نئی شکل دی ہے۔

پاک فوج کے بیان میں کہا گیا ہے، “مسلح افواج ان شاندار دماغوں کو زبردست خراج تحسین پیش کرتی ہیں جنہوں نے مشکل چیلنجوں کے دوران یہ کامیابی حاصل کی اور اسے حاصل کیا۔ ہم ان سائنسدانوں اور انجینئروں کو سلام پیش کرتے ہیں جنہوں نے ناممکن کو حقیقت میں بدل دیا۔ پاکستان زندہ باد”

چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے کہا کہ یوم تکبیر قومی فخر، بے مثال جرات اور بہادری کی علامت ہے۔

سپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف اور ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی زاہد اکرم درانی نے 28 مئی کے موقع پر پوری قوم کو مبارکباد پیش کی ہے جب پاکستان بین الاقوامی سطح پر پہلی اسلامی ایٹمی طاقت تسلیم کیا گیا۔

یوم تکبیر کے موقع پر سپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف نے اس یقین کا اظہار کیا کہ ایٹمی طاقت ہونے کا درجہ حاصل کر کے پاکستان کا دفاع ناقابل رسائی بنا دیا گیا ہے۔

انہوں نے 9 مئی کو فوجی تنصیبات اور یادگار شہداء پر توڑ پھوڑ کی شدید مذمت کی۔

ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی زاہد اکرم درانی نے کہا کہ 28 مئی مادر وطن کے دفاع کو ناقابل رسائی بنانے کے قوم کے عزم کی یاد دلاتا ہے۔

انہوں نے 9 مئی کو ہونے والی توڑ پھوڑ کی بھی مذمت کی اور اسے سیاسی تاریخ کا سیاہ ترین دن قرار دیا۔

گورنر خیبر پختونخوا نے کہا کہ 28 مئی ملکی تاریخ کا سنہرا دن تھا۔

گورنر بلوچستان نے ملک کے دفاع کو ناقابل تسخیر بنانے والے تمام لوگوں کو زبردست خراج تحسین پیش کیا جنہوں نے مشکلات کا ڈٹ کر مقابلہ کیا۔

اسی مصنف کے اور مضامین
- Advertisment -

مقبول خبریں